ایرانی وزیر خارجہ کے طیارےکوایندھن دینے سےانکار،جرمن فوج کی مداخلت

یورپ ڈیسک﴿روزنامہ یورپ انٹرنیشنل﴾معلوم ہوا ہے کہ رواں ماہ میونخ سکیورٹی کانفرنس کے دوران برلن حکومت کو ایک پریشانی کا سامنا کرنا پڑا تھا ۔

ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف بھی اس کانفرنس میں مدعو تھے لیکن میونخ ہوائی اڈے پر کوئی بھی کمپنی ان کے طیارے میں ایندھن بھرنے کے لیے تیار نہیں تھی۔

آئل کمپنیوں کا کہنا تھا کہ ایرانی طیارے میں تیل بھرنے سے ایران کے خلاف عائد امریکی پابندیوں کی خلاف ورزی ہو گی۔

اس صورت حال میں جرمن فوج کو مداخلت کرنا پڑی جس کے بعد جواد ظریف میونخ پہنچے تھے۔

میونخ سکیورٹی کانفرنس کے سربراہ وولف گانگ اشینگر نے بتایا کہ یہ معاملہ اس حقیقت کا غماز ہے کہ مشکل صورت حال میں ہم ایک دوسرے سے بات چیت بھی نہیں کر سکتے۔